عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل میاں افتخارکااچانک سیلاب سےمتاثرہ علاقوں کا دورہ،سیاسی پروگرامات ملتوی

پبی(تفہیم ڈاٹ پی کے آن لائن)عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل میاں افتخار حسین کو آبائی حلقے میں سیلاب سے بڑی تباہی کی اطلاع ملتے ہی اچانک سیلاب زدہ علاقوں میں پہنچ گئے، میاں افتخار حسین کی آمد کی اطلاع پر پولیس کی دوڑیں لگ گئیں، گذشتہ شب بارش سے سیلاب کی وجہ سے پبی اور ملحقہ دیہاتوں میں سینکڑوں مکانات کو نقصان پہنچا اور زیر کاشت اراضی پر کھڑی فصلیں تباہ ہوگئیں،سیلاب کی تباہی کی اطلاع پر میاں افتخار حسین بغیر کسی پروٹوکول کے سیلاب زدہ علاقوں میں پہنچ گئے اور متاثرین سے ہمدردی کااظہار کیا ،واضح رہے کہ دہشت گردی کی حالیہ واقعات کے بعد انہیں سیکیورٹی وجوہات کی بناء پر سیاسی سرگرمیوں کو محدود کرنے کی ہدایات ملی ہیں،تاہم گذشتہ شب اُنہوں نے آبائی حلقے میں سیلاب کی تباہی کاسن کر اپنے علاقے کا رخ کردیا اور علی بیگ سمیت ملحقہ علاقوں کادورہ کیا اور نقصانات کا جائزہ لیا(جاری ہے)ویڈیو کے بعد

جبکہ متاثرین سیلاب سے ہمدردی کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ نگران حکومت سے اس حوالے سے ہم نے مطالبہ کیاہے کہ متاثرین سیلاب کے نقصانات کاازالہ کریں اور ایمرجنسی بنیادوں پر متاثرین سیلاب کوبھرپور مدد فراہم کریں ،اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے میاں افتخار حسین نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت کی جانب سے ناجائزتجاوزات اور برساتی نالوں کی پشتوں کی تعمیر کاپول کھل گیا.انہوں نے کہا کہ شہر میں چند نالوں کی مرمت کرکے انقلاب اورتبدیلی کے ڈھنڈورے پیٹے گئے اگر حکومت حقیقی معنوں میں انکروچمنٹ اور برساتی نالوں سے ناجائز تجاوزات ہٹانے اور سائیڈوں کی توسیع و مرمت کرتی تو آج یہ سینکڑوں مکانات تباہ نہ ہوتے اور شہریوں کونقصان کاسامنا نہ کرنا پڑتا،انہوں نے کہا کہ ہم بھی دعاگو ہیں اور قوم بھی دعاکریں کہ مزید اس قسم کی بارش اور تباہی نہ ہو .انہوں نے کہا کہ یہ قدرتی آفات ہیں،لیکن حکومت کی بھی ذمہ داری بنتی ہے کہ ادارے فعال ہوں اور بروقت امدادی کاروائیوں اور پیشگی حفاظتی اقدام کرے تاکہ ایسے نقصانات نہ ہوں جو ہم دیکھ رہے ہیں انہوں نے کہا کہ ہم نے سیلاب سے متاثرہ علاقوں کے لوگوں کی امداد کرنے کیلئے تمام سیاسی پروگرامات بھی ملتوی کردئے ہیں.

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں