نوشہرہ : پی کے 65انجینئرطارق خٹک کے کامیاب جلسوں نےضلع نوشہرہ کی سیاست کارخ بدل دیا،طارق خٹک نےبھرے جلسے میں راز کی وہ بات بتادی جسکے بعد اُن کی کامیابی یقینی ہوگئی

پبی(تفہیم ڈاٹ پی کےآن لائن)سابق ممبرقومی وصوبائی اسمبلی اور متحدہ مجلس عمل کے نامزد اُمیدوارصوبائی اسمبلی حلقہ پی کے65 انجینئرطارق خٹک کیلئےآئمہ مساجد اور علمائے کرام کی ڈورٹوڈور مہم کے بعد انکی پوزیشن مستحکم ہوگئی ہے،انجینئرطارق خٹک پاکستان پیپلز پارٹی کے پلیٹ فارم سے ایک مرتبہ رکن قومی اسمبلی اور ایک مرتبہ رکن صوبائی اسمبلی بھاری اکثریت سے کامیاب ہوئے تھے،خاندانی طورپردینی حلقوں کے انتہائی قریب ہونے کی وجہ سے چند ماہ قبل ڈاگ اسماعیل خیل میں مولانا فضل الرحمان کی موجودگی میں باقاعدہ غیر مشروط جمعیت علمائے اسلام میں شمولیت کااعلان کیا تھا متحدہ مجلس عمل کے قیام کے بعد انکی سیاسی کیرئرکو دیکھتے ہوئے متحدہ مجلس عمل کی جانب سے پی کے 65 کیلئے اُمیدوار نامزد کردیا الیکشن کیلئے میدان میں آنے کے بعد مسلس ربطہ عوام مہم شروع کردیا اور حلقہ پی کے 65 میں بڑے پیمانے پرشمولیتی جلسوں کا آغاز کردیا، گذشتہ دنوں خٹک نامہ اور متصل دیہاتوں میں شمولیتی جلسوں کے بعد انہوں نےکم وقت میں علمائے کرام اور مذہبی حلقوں کواپنالیااور اب کئی روز سے آئمہ مساجد و علمائے کرام نے انکیلئے ڈور ٹو ڈور مہم کاآغاز کردیا علمائے کرام کی جانب سے پی کے65میں متحدہ مجلس عمل کے ضلعی صدر و نامزد اُمیدوار این اے 26آصف لقمان قاضی اور انجینئرطارق خٹک کیلئے مسلسل ڈور ٹو ڈور اور بازاروں میں شاپ ٹو شاپ مہم شروع کئے جانے کے بعد دونوں اُمیدواروں کی پوزیشن مکمل طور پر مستحکم ہوتی نظر آرہی ہے(جاری ہے) ویڈیو کے بعد

دونوں اُمیدواروں کے مشترکہ مہم اور بڑے بڑے جلسوں نے بھی پورے ضلعے کی سیاست کا نقشہ بدل کررکھ دیا ہے،ایسے میں گذشتہ روز پی کے 65 کے سیاسی گڑ پبی میں گذشتہ شب ایک عظیم الشان جلسہ عام بھی علاقائی سیاست پر مکمل طور اثر انداز ہوا،پبی میں ایسے وقت پر جہاں پیپلزپارٹی ،پاکستان تحریک انصاف اور عوامی نیشنل پارٹی کے جلسے بھی جاری تھے حاضری کے لحاظ سے متحدہ مجلس عمل کا جلسہ عام متاثر کُن رہا،پبی میں جلسہ عام سے متحدہ مجلس عمل کے صلعی قائدین کے علاوہ جماعت اسلامی خیبرپختونخواکے امیرسینیٹرمشتاق احمد خان نے بھی خطاب کیا مقررین نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل ہی پاکستان کی بڑی سیاسی و مذہبی قوت ہے جس کے میدان میں آنے کے بعد دیگر سیاسی پارٹیوں کےاوسان خطاہوچکےہیں انہوں نے کہا متحدہ مجلس عمل کے پاس وہ قیادت و صلاحیت موجود ہے جس سے عام شہری کے مسائل حل ہوسکتے ہیں ،اس موقع پر متحدہ مجلس عمل کے نامزد اُمیدوار برائے صوبائی اسمبلی حلقہ پی کے65انجینئرطارق خٹک نے کہا کہ ہم نے بطوررکن قومی و صوبائی اسمبلی عوام کے مفاد کیلئے ترقیاتی کام کئے ہیں،انہوں نے کہا کہ اگر چہ میں پاکستان پیپلز پارٹی کے ٹکٹ پرمنتخب ہوا تھا لیکن اسمبلیوں میں میں ہمیشہ علمائے کرام کے قریب رہا اور علمائے کرام کی ہمیشہ ہر وقت حمایت کی اور یہی وجہ ہے کہ آج علمائے کرام نے ایک بار پھر اپنے پلیٹ فارم سے متفقہ طور پرصوبائی اسمبلی کی سیٹ کیلئے نامزد کیا ہےابہوں نے کہا کہ زمانہ طالب علمی سے سیاسی خاندان سے تعلق رہااور مختلف پلیٹ فارمز پر عوامی مسائل کے حل کیلئے کوشاں رہا لیکن جب سے میں نے متحدہ مجلس عمل میں شمولیت کااعلان کیا ہے تب سے مجھے وہ دلی سکون ملاہے جو کہیں نہیں ملا انہوں نے کہا کہ میری ساری زندگی عوام کے سامنے ہے ہم نے مفادات کی سیاست کی بجائے خدمت کی سیاست کی ہے انہوں نے کہا کہ اب کچھ لوگ کہہ رہے ہیں کہ باچاخانی اور کچھ لوگ عمران خانی نئے پاکستان اور تبدیلیوں کے نعرے لگاتے پھرتے نظر آرہے ہیں لیکن ہم کہتے ہیں اب قوم کی خانی اور نت نئے نعروں کی متحمل نہیں ہوسکتی اور اب ہمارے پاس اللہ اور رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی غلامی کے سوا کوئی آپشن نہیں ،انشاء اللہ 25جولائی کا سورج اللہ اور اسکے رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے غلاموں کیلئے ایک نوید لیکرطلوع ہوگا..
ایسے وقت میں جب سیاسی لیڈروں کی جانب سے گالی گلوچ کی سیاست کا سلسلہ جاری ہے ایسے میں متحدہ مجلس عمل کے امیدواروں کے کامیاب اور عوام کو امن و محبت بھرے جلسوں نے حقیقت میں ضلع نوشہرہ کی سیاست کارخ بدل دیا ہے، متحدہ مجلس عمل کے بڑےبڑے جلسوں کے بعد گالی گلوچ کی سیاست سے مایوس نیوٹرل طبقے کو بھی ایک اُمید دی ہے اور اُنہیں اپنی طرف متوجہ کردیاہے اور آنے والے انتخابات کانقشہ بھی بدلتاہوا نظر آرہاہے ہے..

Manki Shareef

Tariq Khattak In Jalsa

Tariq Khattak In Jalsa

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں