عوام 25جولائی کو کراچی کو تباہ کر نے والے مجرموں کو مسترد کر دیں ، سراج الحق کاکراچی میں جلسوں سے خطاب

کراچی (تفہیم ڈاٹ پی کےآن لائن) متحدہ مجلس عمل کے نائب صدر و امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹرسراج الحق نے کہا ہے کہ کراچی کے عوام 25جولائی کو کراچی کو کچرے کا ڈھیر بنانے ، شہرمیں خون خرابہ کرانے ، شہر کو تباہ و برباد کر نے اور پانی سے محروم کر نے والے مجرموں کو مسترد کردیں اور اپنے ووٹ کی طاقت سے 25جولائی کا دن ان مجرموں کے لیے یومِ احتساب ، یوم حساب اوریوم انقلاب بنادیں ۔
عوام کرپشن فری، اسلامی و خوشحال پاکستان کے لیے اورنفرتوں و تعصبات سے با لا تر ہو کر ایک عظیم الشان پاکستان بنانے کے لیے متحدہ مجلس عمل کا ساتھ دیں ۔انسان چاند پر پہنچ گیا ہے اور کراچی کے عوام آج پانی کو ترس رہے ہیں۔ پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم نے سندھ اور کراچی میں حکمرانی کی لیکن عوام کے بنیادی اور دیرینہ مسائل آج بھی موجود ہیں۔(جاری)ہے

Gathering

ان خیالات کا اظہار انہوں نےکراچی میں متحدہ مجلس عمل کی انتخابی و رابطہ عوام مہم کے سلسلے میں مختلف قومی و صوبائی اسمبلی کے حلقوں میں دورے کے موقع پر لانڈھی ، قائد آباد ، حسینی چوک ، مظفر آباد کالونی ، پٹیل پاڑہ ، عبد اللہ کالج نارتھ ناظم آباد پر عوام اجتماعات اور ریلیوں سے خطاب کر تے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر امیر جماعت اسلامی کراچی امیدوار این اے 250حافط نعیم الرحمن ، جماعت اسلامی کراچی کے نائب امیر و امیدوار این اے 238محمد اسلام ، امیدوار پی ایس 89ممتاز حسین سہتو ، امیدوار پی ایس 91علامہ احسان اللہ ٹکروی امیدوار این اے 245سیف الدین ایڈوکیٹ ، امیدوار پی ایس 106اسلم غوری ، امیدوار پی ایس 105سرور علی ، امیدوار پی ایس 130نسیم صدیقی ، امیدوار پی ایس 120عبد الرزاق خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ ہمارا منشور عزم اور پروگرام یہ ہے کہ ہم عوام کے لیے ترقی اور خوشحالی امن و سکون اور عزت کے ساتھ روٹی ،کپڑا اور مکان چاہتے ہیں، بچوں کے ہاتھوں میں قلم اور کتاب اور تعلیم یافتہ نوجوانوں کے لیے روزگار چاہتے ہیں۔مظلوموں اور محروموں کے لیے انصاف اور آئندہ آنے والی نسلوں کے مستقبل کو روشن اور ملک کو مضبوط اور محفوظ بنانا چاہتے ہیں ۔دینی جماعتوں نے مجلس عمل کی صورت میں اتحاد امت کا بھرپور مظاہرہ کیا ہے اور تمام تر مسلکی و فروعی اختلافات سے بالاتر ہوکر ملک اور قوم کی ترقی وخوشحالی اور کرپٹ اشرافیہ سے نجات کے لیے جدوجہد شروع کی ہے ۔ہماری صفوں میں کسی کا دامن کرپشن سے داغ دار نہیں ہے ۔ ہمارے ساتھ کوئی قرضے معاف کروانے اور قومی خزانہ کو لوٹنے والا نہیں ہے ۔ مجلس عمل نے انتہائی مخلص ، اہل اور دیانت دار قیادت کو امیدواروں کی صورت میں پیش کیا ہے ۔عوام 25جولائی کو انتخابی نشان ’’کتاب‘‘ مہر لگاکر مجلس عمل کے امیدواروں کو کامیاب بنائیں۔ یہ قیادت ہی عوام کے مسائل حل کرسکتی ہے ۔انہوں نے کہاکہ 30سالوں سے کراچی کو یرغمال بناکر رکھا گیا ، عوام کو سہولتوں سے محروم رکھا گیا ۔ پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم نے سندھ اور کراچی میں حکمرانی کی لیکن عوام کے بنیادی اور دیرینہ مسائل آج بھی موجود ہیں۔(جاری)ہے

Sirajulhaq with his Team

انہوں نے کہا کہ کراچی کے درجنوں مقامات پر ہمارا جس طرح والہانہ اورفقید المثال استقبال ہوا ہے اس بات کا ثبوت ہے کہ عوام تبدیلی چاہتے ہیں اوریہ بات یقین سے کہی جا سکتی ہے کہ کراچی اور پورے ملک کا مستقبل متحدہ مجلس عمل سے وابستہ ہے ۔ مجلس عمل آگے بڑھتا ہوا ایک کاروان ہے ۔ نفرتوں ، عصبیتوں اور تمام ترعلاقائی اور لسانی تعصبات سے بالا تر ہو کر محبتوں کا کارواں ہے ۔مجلس عمل کے پاس پاکستان کو ایک اسلامی اورخوشحال پاکستان بنانے اور ملک اور قوم کو ترقی و خوشحالی کی راہ پر گامزن کرنے کا واضح پروگرام ہے ۔ مجلس عمل کا مقابلہ کرپشن زدہ طبقہ اشرافیہ ، لینڈ مافیا ، سیکولر و لبرل لابی کے عالمی اسٹبلشمنٹ اور ملک پرقابض جاگیرداروں ، سر مایہ داروں اوروڈیروں سے ہے ۔یہ جنگ دین اور لادینیت کے درمیان ، حیا اوربے حیائی اوراسلامی تہذیب و ثقافت اورمغربی کلچر کے درمیان جنگ ہے ۔مجلس عمل کے پاس اپنے پروگرام اور منشور پر عمل در آمد کرنے کے لیے ایک پوری ٹیم اور ہوم ورک موجود ہے ۔ سراج الحق نے کہا کہ ملک کے ایوانوں میں نا اہل اور کرپٹ عناصر نہیں ایماندار اوردیانت دار افراد ہونے چاہیئے ۔ ایماندار اور دیانت دار قیادت اور کرپشن سے پاک قیادت جب ایوانوں میں جائے گی توعوام کے مسائل حل ہوں گے اور محروموں ، مجبوروں اور پسے ہوئے طبقے کو حقوق ملیں گے ۔انہوں نے کہا کہ انسان چاند پر پہنچ گیا ہے اور کراچی کے عوام آج پانی کو ترس رہے ہیں ۔ یہ یہاں پر حکومت کر نے والوں کی کارکردگی ہے جنہوں نے عوام کو پانی جیسی بنیادی سہولت تک سے محروم کررکھا ہے ۔ کراچی کے عوام کی زندگی اجیرن بنانے کی ذمہ داری ایم کیو ایم اور پیپلز پارٹی پرعائد ہو تی ہے ۔ یہ جماعتیں ہی یہاں برسراقتدار رہی ہیں ان ہی جماعتوں نے کراچی کو تباہ و بربادکیا ہے ۔حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ مجلس عمل کی انتخابی مہم تیزی سے جاری ہے اورعوام کے اندرہمارے امیدواروں کو زبردست پذیرائی مل رہی ہے ۔ کراچی کے عوام مجلس عمل کو ہی شہر میں ایک متبادل قوت سمجھتے ہیں اور باہر سے آنے والوں کو مسترد کر تے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ کراچی میں پانی کے بحران کی ذمہ داری ایم کیو ایم اور پیپلز پارٹی پرعائد ہو تی ہے ۔مجلس عمل کراچی میں پانی کے مسئلے کو مستقل اور پائیدار بنیادوں پر حل کرائے گی ۔انہوں نے کہا کہ مجلس عمل نے 15جولائی کو حسن اسکوائر پر عظیم الشان جلسہ عام کا اعلان کیا ہے ۔ جس میں شہر بھر سے لاکھوں افراد شریک ہوںگے ۔ مجلس عمل کے مرکزی قائدین خطاب کریں گے ۔ ہرجلسہ کراچی کی تاریخ کا سب سے بڑا جلسہ ثابت ہو گا اور کراچی کی سیاسی فضا کا رخ متعین کرے گا ۔ ہمارا جلسہ ہرصورت میں حسن اسکوائر پر ہو گا اور اگر کچھ لاڈلوں کو خوش کر نے کے لیے جلسے کو روکنے کی کوشش کی گئی یا رکاوٹیں پیدا کی گئیں تو اسے کسی صورت قبول نہیں کیا جائے گا اور15جولائی کو جلسہ عام ہرصورت میں تمام ترروکاوٹوں کو روندتے ہوئے حسن اسکوائرپر ہی منعقدہو گا ۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں