پولیومہم :کمشنرکوہاٹ نے سخت احکامات جاری کردئے،ایل ایچ ڈبلیوکی خالی اسامیاں بھی فوری طور پرپُرکرنےکی ہدایات جاریں

پولیومہم :کمشنرکوہاٹ نے سخت احکامات جاری کردئے،ایل ایچ ڈبلیوکی خالی اسامیاں بھی فوری طور پرپُرکرنےکی ہدایات جاریں

پشاور(رپورٹ:نواب شیر)کمشنر کوہاٹ ڈویژن مطہرزیب نے متعلقہ حکا م کو ہدایت کی ہے کہ وہ پولیو مہم میں خصوصی دلچسپی لیں اور 5سال سے کم ہر بچے تک رسائی یقینی بنائیں کیونکہ جب تک ایک بچہ بھی پولیو کا شکار ہوگا پولیو کا خطرہ رہے گالہذا پولیو کی حساسیت کے پیش نظر اس میں کسی قسم کی غفلت یا کوتاہی نہ کی جائے۔ انہوں نے ایل ایچ ڈبلیو ز کی خالی آسامیاں فوری طور پر پر کرنے کی بھی ہدایت کی۔یہ ہدایات انہوں نے بدھ کے روزکمشنرہاؤس کوہاٹ میں انسدادپولیوسے متعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے دیں۔اجلاس میں دوسروں کے علاوہڈی آئی جی کوہاٹ اول خان، ڈپٹی کمشنر کوہاٹ خالد الیاس،ڈپٹی کمشنر کرک شفیع اللہ ، ڈپٹی کمشنر ہنگو شاہد محمود،کرم اور اورکزئی ایجنسیوں اور ایف آرکوہاٹ کی پولیٹیکل انتظامیہ ،کوہاٹ ،کرک اور ہنگو کے ڈی ایچ اوز، کرم اور اورکزئی کے ایجنسی سرجنز اور دیگر متعلقہ حکام نے بھی شرکت کی۔اجلاس میں کوہاٹ،کرک، ہنگو، کرم ایجنسی،اورکزئی ایجنسی اور ایف آرکوہاٹ میں انسداد پولیوسے متعلق تفصیلی بریفنگ دی گئی اور اس سلسلے میں کئی اہم فیصلے کئے گئے۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ مذکورہ تینوں اضلاع اور فاٹا میں15جنوری سے شروع ہونے والے پولیو مہم کے دوران198یونین کونسلز اور 12افغان مہاجرین کیمپس میں 6لاکھ 32ہزار بچوں کو پولیو کے قطرے پلوائے جائیں گے اور اس مقصد کے لئے 2ہزار 8سو53ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔ کمشنرکوہاٹ نے متعلقہ حکام سے کہا کہ وہ پولیو مہم کو کامیاب بنانے کے لئے کمیو نٹی کواعتماد میں لے کر اسے مہم کا حصہ بنائیں، مسنگ چلڈرن اور لوکوریج یونین کونسلز پر توجہ مرکوز کی جائے اورخواتین کی زیادہ سے زیادہ شرکت یقینی بنائی جائے کیونکہ اس کے بغیر مہم کوکامیاب بنانا مشکل ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ حکومت خیبر پختونخوا پولیو کے خاتمے میں انتہائی سنجید ہ ہے اور اس موذی مرض کے خلاف صوبے بھر میں جنگی بنیادوں پرکام کر رہی ہے جس کی وجہ سے پولیو پر کافی حد تک قابو پا لیاگیا ہے جبکہ سال2017ء میں پورے ڈویژن میں پولیو کا کوئی کیس سامنے نہ آنا انتہائی حوصلہ افزاامر اورپولیوکے خلاف متعلقہ مقامی اداروں اور والدین کی دلچسپی کا عکاس ہے اور امید ہے کہ تمام سٹیک ہولڈرز اس بہترین کارکردگی کو برقرار رکھیں گے۔مطہر زیب نے کہاکہ نئی نسل کو اپا ہج ہونے سے بچانا ہم سب کا قومی فریضہ ہے لہذا معاشرے کے ہر فرد کو اس سلسلے میں اپنے حصے کا کردار ادا کرنا چاہیے۔ انہوں نے والدین سے اپیل کی کہ وہ اینٹی پولیو ٹیموں کے ساتھ مکمل تعاون کریں اور اپنے پانچ سے کم عمر کے تمام بچوں کو پولیوقطرے ضرور پلوائیں۔انہوں نے حکام کو واضح ہدایت کی کہ جو بھیسرکاری ملازم پولیو ڈیوٹی سے انکارکرے اس کے خلاف فوری طورپر محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائے۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں