سوات،ڈرگ مافیانےقانون کو ہاتھ میں لے لیا،صوبےکے ایماندارترین ڈرگ انسپکٹرکی جانب سے سیل شدہ میڈیکل سٹورکوڈی سیل کردیا،ڈرگ انسپکٹرکوخمیازہ بھگتنے کی بھی دھمکیاں

سوات،ڈرگ مافیانےقانون کو ہاتھ میں لے لیا،صوبےکے ایماندارترین ڈرگ انسپکٹرکی جانب سے سیل شدہ میڈیکل سٹورکوڈی سیل کردیا،ڈرگ انسپکٹرکوخمیازہ بھگتنے کی بھی دھمکیاں

سوات(تفہیم ڈاٹ پی کے آن لائن) سوات کے شہر مینگورہ میں ڈرگ انسپکٹرعمران اللہ کے چھاپے،مینگورہ شہر میں غیرقانونی ادویات کی برامدگی پردومیڈیکل سٹور سیل کردئے،میڈیکل سٹور سیل کرنے پر کیمسٹ یونین کے صدر نے قانون کو ہاتھ میں لیتے ہوئے دونوں میڈیکل سٹورزکو ڈی سیلڈ کردیااس موقع پر ڈرگ انسپکٹر کے خلاف نعرے اور یونین صدر زندہ باد کے نعرے بھی لگائے گئے،خیبرپختونخوا حکومت کی جانب سےواضح احکامات پر اس وقت ہیلتھ اصلاحات اور جعل سازی کی روک تھام کیلئےجہاں فارمیسی کونسل حکام ڈرگ انسپکٹرز ٹیموں کےچھاپوں کے سلسلے جاری ہیں وہاں پر ڈرگ مافیابھی متحرک اور آخری حدود کراس کررہاہے،اس سلسلے میں معلوم ہوا ہے کہ پشاور نمک منڈی میں ہول سیل میڈیکل سٹورز مالکان نے اب دکانوں میں ڈنڈہ بردار بٹھارکھے ہیں جو کسی بھی معائنہ کرنے والی ٹیم پر حملہ آور ہوجاتے ہیں ایسی صورتحال میں صوبائی حکومت کی خاموشی اور مافیا کو فری ہینڈزدینے کی پالیسی بھی معنی خیزجبکہ یہ پالیسی فارمیسی کونسل اور محکمہ صحت کے حکام کی حوصلہ شکنی کا باعث بن گئی ہے، ادھر26دسمبرکو مینگورہ شہر میں ڈرگ انسپکٹرعمران اللہ نے اپنی ٹیم کے ہمراہ مختلف میڈیکل سٹوروں اور لیبارٹریوں کا معائینہ کیا اس دوران دو میڈیکل سٹورزسے غیرقانونی ادویات کی فراہمی پرمذکورہ میڈیکل سٹورسیل کردئے تو یونین کی صورت میں ڈرگ مافیا نے ڈرگ انسپکٹراور انکی ٹیم کو گھیرے میں لے لیا ،(واقعے کی ویڈیو دیکھیں)

تبادلے کی دھمکیاں دیتے ہوئے یونین کے صدر نے قانون کو ہاتھ میں لیتے ہوئے سیلڈ دکانوں کو ڈی سیلڈ کردیا جوکہ عدالتی کاروائی کے بغیر ڈی سیلڈ نہیں کئے جاسکتے تھے ،قانونی کاروائی پر جہاں ڈرگ انسپکٹر انعام اللہ خراج تحسین کے مستحق تھے وہاں صوبائی حکومت کی جانب سے بھی اس معاملے کو دبانے کی کوششیں کی جارہی ہیں اور اب تک قانون کو ہاتھ میں لینے والے مافیا کے خلاف کوئی کاروائی عمل میں نہیں لائی جاسکی جس سے صوبائی حکومت کی اپنی رٹ کونافذ کرنے اور عمل درامد کروانے کے احکامات کی کمزروری سامنے آگئی،اس واقعہ کے بعد فارماسسٹ ایسوسی ایشن ہزارہ کے صدر ساجد عزیز نے سماجی ویب سائٹ پر سخت ردعمل کااظہار کرتے ہوئے یونین صدر کے اقدام کی شدید مذمت کرتے ہوئے صوبائی حکومت سے انکے خلاف قانونی کاروائی کامطالبہ کیا ہے،ساجد عزیز کے مطابق ڈرگ انسپکٹرکاشمار صوبے کے ایمانداراور محنتی آفیسرز میں ہوتا ہے ایسے میں صوبائی حکومت سمیت کیمسٹ برادری کوبھی انکی پشتیبانی کرنی چاہئے تاکہ ملک میں جعل سازی کاخاتمہ اور اداروں کی آسانی سے ریگولرائزیشن ہوسکے .اس حوالے سے عوامی و سماجی حلقوں میں بھی ڈرگ مافیا کے اس اقدام کے بعد تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے اور صوبائی حکومت سے مافیا کے خلاف کاروائی اور ایماندار آفیسرز کی پشتیبانی کامطالبہ کیا ہے..

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں