سعودی مذاکراتی عمل اور افغان طالبان کاانکار

کابل(ویب ڈیسک) سعودی عرب میں منعقد علماء کانفرنس میں شہزادہ خالد الفیصل نے زور دیا ہے کہ افغانستان میں جاری جنگ کے خاتمے کیلئے تمام فریقین خطے میں امن و امان کی بحالی کیلئے مذاکراتی عمل شروع کریں تاہم طالبان نے مذکورہ اجلاس کے مطالبے کو مسترد کردیا۔افغانستان کی مقامی میڈیا کے مطابق امیر مکہ شہزادہ خالد الفیصل نے اس امر پر خوشی کا اظہار کیا کہ سعودی عرب اور اسلامی ممالک کے تعاون کی تنظیم (او آئی سی) کے اشتراک سے افغانستان میں امن مذاکرات کیلئے نئے دروازے کھلیں گے جو جنگ زدہ ماحول کے خاتمے کا باعث بنیں گے۔سعودی میڈیا کے مطابق شہزادہ خالد الفیصل نے واضح کیا کہ آج ہم بہت پرامید ہیں کہ ہماری کوششوں سے ماضی کا سیاہ باب بند ہو جائیگا اور نئے دور کا آغاز ہو گا، افغانستان میں استحکام اور سیکیورٹی کے حالات بہتر ہوں گے تاہم اس کی تکمیل کیلئے فریقین کو برداشت، مفاہمت اور مذاکرات کا راستہ اختیار کرنا ہوگا جیسا کہ مذہب اسلام اجازت دیتا ہے۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں