100 دن تو بہت دور تحریک انصاف نے 35 دنو ں میں میدان مار لیا ، اگلے 48 گھنٹوں میں قوم کو کیا خوشخبری سنائی جانیوالی ہے ؟

لاہور (ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی (ایل ڈی اے) کا ریکارڈ جلنے کی تحقیقات کیلئے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم تشکیل دینے کی ہدایات جاری کی ہیں۔ وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت پنجاب کابینہ کا اجلاس ہوا۔ وزیراعظم نے کہا کہ آج تک جتنی عمارتوں میں آگ لگی ہےاس کی تحقیقات کیلئے جے آئی ٹی بنائی جائے تاکہ حقائق سامنے آئیں، ہم نے ماضی کی کریشن کو بے نقاب کرنا ہے، تمام بڑے بڑے منصوبوں کا آڈٹ کرایا جائے گا اور گزشتہ 10برس کی ایک ایک چیز عوام کے سامنے لائی جائےگی۔ اجلاس کے دوران وزیراعظم عمران خان نے آئندہ 48 گھنٹوں کے دوران نئے بلد یاتی نظام کو حتمی شکل دینے کی ہدایت کی ہے۔وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ وزرا کیلئے کوئی چھٹی نہیں ، وزرا ء ہفتے میں 7 روز کام کریں، منتخب نمائندوں کا بھی احتسا ب ہوگا، حقیقی تبدیلی تب آئے گی جب نچلی سطح پر اختیا را ت کو منتقل کرکے عوام کو بااختیار بنایا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ آفس میں عوام کے لئے شکایتی سیل بنایا جائے اور مسائل کے حل کے لیے روایتی طریقہ کار سے ہٹ کر ان کا حل تجویز کیا جائے۔ عمران خان نے وزرا کو ہدایت کی کہ عوام کو بتائیں کہ حکومتی ادارے کیسے قرض میں ڈوبے ہوئے ہیں اور ان کے پیسے پر حکمران کیسے شاہانہ زندگیاں گزارتے تھے، ۔ان کا کہنا تھا کہ ضلعی زکوۃ کمیٹیوں کو فعال کیا جائے اور زکوۃ تقسیم کے نظام میں شفافیت یقینی بنائی جائے۔ قبل ازیں وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت بلدیاتی نظام سے متعلق اہم اجلاس ہواجس میں گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور، گورنر خیبر پختو نخوا شاہ فرمان، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بز د ا ر اور وزیر اطلاعات فواد چوہدری سمیت پارٹی کے سینئرز عہدیدا رو ں نے شرکت کی۔اس موقع پر عمران خان کا کہنا تھا کہ اختیارات کونچلی سطح تک منتقل کرنا پی ٹی آئی حکومت کا سب سے اہم ایجنڈا ہے، عوام کو صحیح معنوں میں بااختیار بنانا ہے۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ یہ بات یقینی بنائی جائے گی کہ عوام اپنے منتخب نمائندوں کا مؤثر احتساب کریں اور اختیارات کی نچلی سطح پر منتقلی اور لوکل باڈیز نظام سے نئی لیڈرشپ اوپر آنے میں مدد ملے گی۔عمران خان کا کہنا تھا کہ ماضی میں پارلیمنٹرینز کی توجہ قانون سازی پر کم اور فنڈز کے حصول پر زیادہ رہی، نئے بلدیاتی نظام کا مقصد اسٹیٹس کو کو توڑنا ہے، ایسا بلدیاتی نظام لایا جائے گاجس میں عوامی نمائندوں کو بلیک میل نہ کیا جا سکے۔ وزیراعظم نے اس عزم کا اظہار کیا کہ ایسانظام دیں گے کہ بلدیاتی نمائندے اپنی پوری توجہ عوام کی فلاح پر مرکوز کر سکیں۔اس سے قبل وزیراعظم ایک روزہ دورے پر لاہور پہنچے تو ایوان وزیر اعلیٰ میں وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور وزیر بلدیات علیم خان نے انہیں حکومت کے 100 روزہ پلان اور نئے بلدیاتی نظام پر بریفنگ دی۔ اس موقع پر وزیر بلدیات نے تمام محکموں کی 100 روزہ پلان پر ترجیحاتی ایجنڈے پر وزیراعظم کو بریفنگ دی جب کہ نئے بلدیاتی نظام کے مسودے کے حوالے سے بھی وزیر اعظم کو بریفنگ دی گئی۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں