بڑےنجی سکول کے مالک نے شہری کو شراکت داری کاجھانسہ دیکرکروڑوں روپے ہڑپ کرلئے

بڑےنجی سکول کے مالک نے شہری کو شراکت داری کاجھانسہ دیکرکروڑوں روپے ہڑپ کرلئے

نوشہرہ(تفہیم ڈاٹ پی کےآن لائن)بڑےنجی سکول اینڈ کالج نوشہرہ کے مالک نے مردان کے رہائشی کو سکول میں شراکت داری کی
آڑ میں کروڑوں روپے کا ٹھیکہ لگاکر قیمتی اراضی ہتھیا کر اب شراکت داری کے وعدے سے مکر گئے ڈی آر سی مردان نے متاثرہ شخص کی درخواست پر دی پیس سکول اینڈ کالج کے مالک کو رقم ادائیگی کے لئے تحریری مراسلہ بھیج دیا لیکن وہ رقم دینے کی بجائے رفو چکر ہوگیا متاثرہ شخص کا اپنے حق کی آواز کیلئے عدالت جانے کا فیصلہ تفصیلات کے مطابق عبدالمجید مرحوم ساکن گجو خان روڈ مردان کے بیٹے نے ڈی آر سی مردان کو ایک تحریری درخواست دی جس میں کہا گیاتھا کہ دی پیس سکول اینڈ کالج کے مالک ثناء اللہ نے ملاکنڈ بائی پاس روڈ پر میرے والد سے 5 کروڑ روپے مالیت کی قیمتی اراضی سکول اینڈ کالج کیلئے حاصل کی اورمیرے والد کے ساتھ یہ معاہدہ کیا کہ سکول میں آپ کو شرکت دار بنائیں گے سکول وکالج کی تعمیر کے بعد سکول اینڈ کالج کو فوری طورپر چالو کیاگیا اس دوران میں نے والد کا معاہدہ ثناء اللہ کو یاد دلایا جس میں کہاگیا تھا کہ سکول اینڈ کالج کو پاٹنر شپ کے ذریعے چلائیں گے لیکن انہوں نے کافی عرصہ ٹال مٹول سے کام لیا میں نے پھر ڈی آر سی مردان کو ایک تحریری درخواست دی جس میں نے اپیل کی کہ ثناء اللہ نامی شخص نے میرے والد سے پانچ کروڑ روپے مالیت کی قیمتی اراضی پر قابض ہے نہ ہمیں زمین کی قیمت دے رہے ہیں اور نہ ہمیں سکول اینڈ کالج میں شراکت دار بنارہے ہیں ڈی آر سی مردان نے تحریری درخواست پوچھ گچھ کی اور انہوں نے ثناء اللہ کو پانچ کروڑ روپے ادا کرنے کا فیصلہ ہمارے حق میں دے دیا اب ثناء اللہ نہ رقم ادا کررہا ہے اور نہ ڈی آر سی میں پیش ہورہے ہیں اور بار بار نوٹس کے باوجود وہ ڈی آر سی میں حاظر نہیں ہورہے ہیں اور رقم ادا کرنے میں ٹال مٹول سے کام لے رہے ہیں۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں