انڈیپنڈنٹ مانیٹرنگ یونٹ کی وجہ سے سرکاری سکولوں کی کارکردگی میں خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے،محمدعاطف

صوبائی حکومت کی اولین ترجیح تعلیم کے شعبہ کو ایک معیاری شعبہ بناناہے تاکہ ہم اپنے آنیوالے کل کو روشن اور تابناک بنا سکیں،وزیرتعلیم خیبرپختونخوا

پشاور(رپورٹ:نواب شیر)صوبائی وزیر تعلیم و توانائی محمد عاطف خان نے کہا ہے کہ انڈیپنڈنٹ مانیٹرنگ یونٹ (IMU)کی وجہ سے سرکاری سکولوں کی کارکردگی میں خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت کی اولین ترجیح تعلیم کے شعبہ کو ایک معیاری شعبہ بناناہے تاکہ ہم اپنے آنیوالے کل کو روشن اور تابناک بنا سکیں ۔ وہ پشاور میں انڈیپنڈنٹ مانیٹرنگ یونٹ کے وفد سے بات چیت کررہے تھے ۔ وفد میں IMU کے مختلف اضلاع سے واجد احمد ، اشتیاق علی، یاسر حسن شاہ، یاسین، فرحان اور محمد طارق شامل تھے۔ صوبائی وزیرتعلیم نے کہا کہ ہم میرٹ پر یقین رکھتے ہیں اور محکمہ تعلیم میں جتنے بھی اساتذہ ، آئی ٹی سٹاف اور آئی ایم یو سٹاف بھرتی ہوئے ہیں سارے میرٹ پر آئے ہیں اور انکی بہترین کارکردگی کی وجہ سے آج صوبے کے سرکاری سکولوں میں بہتری آئی ہے جس کا واضح ثبوت الف اعلان کا رپورٹ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قومیں تعلیم کے ذریعے ترقی کرتی ہیں نہ کہ گلی کوچوں کی تعمیر سے ، اور ہمیں اللہ تعالیٰ نے یہ موقع دیا ہے کہ ہم اس قوم کو اچھے معمار دیں ۔ وفد نے صوبائی وزیر کو بتایا کہ پورے صوبے میں آئی ایم یو کے تقریباً700ملازمین کام کررہے ہیں جو کہ تاحال مستقل نہیں ہیں اسکے علاوہ انہوں نے اپنے مختلف مسائل سے بھی صوبائی وزیر کو آگاہ کیا ۔ محمد عاطف خان نے کہا کہ حکومت کی ذمہ داری ہے کہ ان کو عوام نے جو مینڈیٹ دیا ہے اور ان پر جو ذمہ داری عائد کی ہے اسکو ملحوظ نظر رکھ کر وہ قانون سازی کریں تاکہ عوام کے مسائل میں کمی لائی جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ آئی ایم یو سٹاف کے مسائل کے حل کیلئے ہم اپنی پوری کوشش کریں گے۔ نیز ان مسائل کے حل کیلئے اگر ضروری ہوا تو حکومت قانون سازی بھی کریگی۔ انہوں نے کہا 40ہزار اساتذہ کو میرٹ پر بھرتی کرنا اور پھر ان کو مستقل کرنا موجودہ صوبائی حکومت اور محکمہ تعلیم کا اہم کارنامہ ہے۔ اسی طرح 17ہزار نئے اساتذہ بھی بھرتی کئے جارہے ہیں تاکہ اساتذہ کی کمی کو پورا کیا جاسکے محمد عاطف خان کو وفد نے بتایا کہ آئی ایم یو سٹاف میں ڈیٹا کلیکشن اینڈ مانیٹرنگ اسسٹنٹس، ڈیٹا اینالسٹ، ویب ڈیولپرز ، کمپیوٹر اپریٹرز اور سپورٹنگ سٹاف شامل ہیں۔ جو کہ فروری 2014سے اپنے فرائض انجام دے رہے ہیں ۔ صوبائی وزیر نے آئی ایم یو سٹاف کی بہترین کارکردگی کی تعریف کی اور آنیوالے وقتوں میں بھی ان سے اسی طرح کارکردگی کی توقع ظاہر کی ۔ انہوں نے وفد کو یقین دلایا کہ آپ کے تمام مسائل کے حل کیلئے حکومت سنجیدگی سے کوششیں کررہی ہے۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں