سینیٹر سراج الحق، چارسدہ سے قومی اسمبلی کا الیکشن لڑیں گے

پشاور(ٹی بی سی نیوز)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سرا ج الحق نے کہا ہے کہ نواز شریف صاحب کا شور مچاناسمجھ سے بالاترہے، چار بار حکومت میں انہوں نے اگراپنی تجوریوں کوبھرنے اور بیرونی ممالک متقل کرنے کی بجائے ملک میں نظام کی بہتری اور مسائل کے حل پر توجہ دیتے تو یہ حالت نہ ہوتی اور وہ مجھے کیوں نکالنے کی فریاد نہ کرتے،نواز شریف کی خوش قسمتی ہے کہ ان کو ایک کمزور اپوزیشن ملی۔الیکشن 2018کو ملک لوٹنے ،سیاست و جمہوریت کو یرغمال بنانے ،قومی خزانے کولوٹ کررقوم بیرونی ممالک منتقل کرنے اور قوم کو بدحال کرنے والوں کیلئے یوم الحساب بنائینگے،کراچی میں قتل ہونے والے قبائلی نوجوان نقیب کو بے گناہ قتل کیا گیا ہے ،میں آئی جی سندھ سے کہتاہوں کہ قاتل خواہ پولیس آفیسر ہو یا کوئی وڈیرہ ، اسے فوراً گرفتار کر کے قرار واقعی سزا دی جائے ۔ان خیالات کا اظہا ر انہوں نے چارسدہ شبقدر پارک میں ایک بڑے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر امیر جماعت اسلامی ضلع چارسدہ ریاض خان نے سینیٹرسراج الحق کے چارسدہ سے قومی اسمبلی کی نشست پر انتخاب لڑنے کابھی اعلان کیا ،جبکہ جلسہ عام سے امیر جماعت اسلامی خیبرپختونخوا مشتاق احمد خان ،مشیر سینیٹرسراج الحق انتخاب خان چمکنی،امیر جماعت اسلامی ضلع چارسدہ ریاض خان،ڈپٹی سیکرٹری جنرل چارسدہ ملک سجاد خان اور دیگر عمائدین نے بھی خطاب کیاجبکہ موقع پرپانچ سو سے زائد عمائدین اور نوجوانوں نے مختلف پارٹیوں سے مستغفی ہوکر اپنے خاندانوں اور ساتھیوں سمیت جماعت اسلامی میں شمولیت کا اعلان کیا ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ قومی خزانے کو لوٹنے اور ملک کے سیاسی وجمہوری اداروں کو یرغمال بنانے والے چارکے ٹولے کے دن گنے جاچکے ہیں اب اسلامی انقلاب ملک کی دہلیز پر دستک دے رہا ہے انہوں نے کہا کہ تمام نظاموں کے تجربے کئے جاچکے ہیں اب اسلامی نظام کے سوا کوئی چارہ نہیں انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ اسلامی نظام کے خلاف پروپیگنڈہ کرتے ہیں کہ اسلامی نظام نافذ کرکے ہاتھ پاﺅں کاٹے جائیں گے تو میں بتانا چاہتاہوں کہ اسلامی نظام ہاتھ پاﺅں کاٹنے کا نام نہیں اسلامی نظام عوام کو حقوق دلانے ،ملک سے غربت کے خاتمے ،قانون پر عمل درامد ،خواتین کو انکے بنیادی حقوق دینے کا نام ہے ،انہوں نے کہا کہ دراصل یہ پروپیگنڈہ وہی چار کاٹولہ کررہاہے جو قانون کی پکڑمیں آکر سخت سزا پانے کے قریب ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم جانتے ہیں کہ عوام کو کس چیز کی ضرورت ہے ۔انہوں نے کہا حکمران صرف ایک شہر لاہور کے عوام کو انصاف دلانے میں ناکام رہے تو اب وہ اور کیا آسمان سے تارے توڑلائیںگے۔ انہوں نے کہا کہ عوام اس چار کے ٹولے کو پہچان چکے ۔لاہور،کراچی ،ڈیرہ اسماعیل خان اور مردان میں پیش آنے والے واقعات کی روک تھام کیلئے ضروری ہے کہ ملک میں آئین و قانون کی حکمرانی کویقینی بنایا جائے۔ جب تک اقتدار افراد اور خاندانوں کے گرد گھومتا رہے گا ملک میں عدل و انصاف کا نظام قائم نہیں ہوسکتا ۔ حکمرانوں نے ہمیشہ خود کو ہر قانون سے بالاتر سمجھا اور ذاتی خواہشات کی تکمیل کے لیے قومی مفادات کا سودا کیا ۔ ناحق بہایا گیا خون اپنا حساب لے کر رہتاہے ۔ سیاسی درندوں کو معصوم لوگوں کا خون پینے کی مزید مہلت نہیں ملے گی ۔ جماعت اسلامی کرپٹ اور بد دیانت سیاسی پنڈتوں سے قوم کو نجات دلانا عین عبادت سمجھتی ہے اور ہم اس عظیم مقصد کے حصول کے لیے آخری حد تک جائیں گے ،انہوں نے کہا کہ ہمارے حکمران بین الاقوامی قوتوں کے آلہ کارہیں ۔ ان کے نزدیک اخلاق و کردار کی کوئی اہمیت نہیں یہ دولت کے پجاری ہیں اور پوری زندگی جائز و ناجائز طریقوں سے دولت ہتھیانے میں لگے رہے ہیں ۔حرام کی دولت کے زور پر سیاست کرنے اور قتدار کے ایوانوں تک پہنچنے والوں کا راستہ روکنا دین کا تقاضا ہے ۔ کرپٹ سیاسی برہمنوں اور پنڈتوں سے ملک و قوم کو نجات دلانا ہمارے نزدیک اللہ کی رضا کا بہترین ذریعہ ہے ۔انہوںنے کہاکہ سیکولر و لبرل ازم کے پجاری دین کا مذاق اڑانے سے بھی باز نہیں آتے ۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ جماعت اسلامی کرپشن سے پاک ملک کی واحد جمہوری و پروگریسو جماعت ہے ۔ جماعت اسلامی نسلی ، مسلکی اور علاقائی تعصبات سے بالاتر جماعت ہے اور یہی جماعت قوم کو ان تعصبات سے نکال کر ملی وحدت اور باہمی اخوت و محبت کے رشتے میں باندھ سکتی ہے ۔۔ انہوںنے کہاکہ جماعت اسلامی کی حکومت میں تعلیم، علاج اور انصاف سب کے لیے مفت ہوگا ۔ ریاست کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنے شہریوں کو سر چھپانے کے لیے چھت مہیا کرے اور مظلوم کی داد رسی کے لیے اس کے گھر کی دہلیز پر انصاف ملے ۔ انہوںنے کہاکہ موجودہ نظام میں غریب کے لیے کچھ نہیں یہ اشرافیہ کا بنایا ہوا نظام ہے جو صرف جاگیرداروں ، وڈیروں اور سرمایہ داروں کے مفادات کی حفاظت کرتاہے ۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں