نگران وزیرصحت کے ہسپتالوں پر چھاپے،غیرحاضری پرکئی ڈاکٹروں کو شوکازنوٹس جاری

پشاور(نواب شیررپورٹ)خیبر پختونخوا کے نگران وزیر صحت و بہبود آبادی اکبر جان مروت نے ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسرلکی مروت کے ہمراہ لکی مروت کے مختلف ہسپتالوں اوربنیادی مراکزصحت کا ددرے کئے۔ اس موقع پر ڈیوٹی سے غیر حاضر ی پر سٹی ڈسٹرکٹ ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر وحیدزکوڈی سمیت چھ ڈاکٹروں کو شوکاز نوٹس جاری کئے گئے۔ جن میں بیگو خیل بی ایچ یو کے انچارج ڈاکٹر شبیر ، ڈاکٹر اشفاق عبدالخیل بی ایچ یو، ڈاکٹر وزیر اللہ احمد خیل بی ایچ یو،سٹی ڈسٹرکٹ ہسپتال کے ڈاکٹر شفقت اور لیڈی ڈاکٹر زبیدہ شامل ہیں۔ اس موقع پر نگران وزیر صحت نے وقت کی پابندی نہ کرنے والے ڈاکٹروں سے ڈیوٹی میں غفلت برتنے پر وضاحت بھی طلب کی ۔ نگران وزیر اکبر جان مروت نے ڈی ایچ او لکی مروت عبدل گل کو مذکورہ ڈاکٹروں کے خلاف تادیبی کاروائی شروع کرنے کے احکامات بھی دئیے ۔ اس دوران نگران وزیر صحت نے ڈی ایچ کیو ، سٹی ڈسٹرکٹ ہسپتال اور مختلف بی ایچ یوز کے دورے بھی کئے ۔ اور وہاں پر مریضوں کو دی جانے والی طبی سہولیات کے معائنے کئے ۔ اس موقع پر اُنہوں نے کہا کہ مریضوں کو بہتر ین سہولیات فراہم کر نا حکومت کی ذمہ داری ہوتی ہے۔ اور اس میں کسی قسم کی غفلت یا کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔ صوبے کے دور دراز کے علاقوں میں ڈاکٹروں کو پرکشش مراعات دی گئی ہے ۔ اس لئے ان کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ ہاں پر مریضوں کو بہترین سہولیات کی فراہمی یقینی بنائیں۔ نگران وزیر صحت نے آئی ایم یو کو ہدایات جاری کی کہ وہ ہسپتالوں میں ڈاکٹر وں کی حاضری پر کھڑی نظر رکھیں اور غیر حاضر ڈاکٹروں کی رپورٹ فوری طورپر متعلقہ حکام کو بھجوائیں۔ نگران وزیر نے ڈینگی کے خلاف بھی متعلقہ حکام کو ہدایات جاری کیں کہ اس وبائی مرض کے خاتمے کے لئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کئے جائیں اور اس سلسلے میں کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی ۔ نگر ان وزیر صحت نے مزید کہا کہ الیکشن کے دوران بھی طبی عملہ چوکس رہیں اور کسی بھی ایمرجنسی سے نمٹنے کے لئے طبی عملے کی حاضریاں یقینی بنائی جائیں۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں